میں خرد مند رہوں یا تیرا وحشی ہو جاوں

میں خرد مند رہوں یا تیرا وحشی ہو جاوں
جو بھی ہونا ہے مجھے عشق میں جلدی ہو جاوں

 

زندگی چاک کی گردش کے سوا کچھ بھی نہیں
میں اگر کوزہ گری چھوڑ دوں مٹی ہو جاوں

 

پھر سے لے جائے میری ذات سے تُو عشق ادھار
اور میں پھر سے تیرے حسن پہ باقی ہو جاوں

 

کوئی دم تُو میرے چہرے پہ خوشی بن کے ابھر
کوئی دم میں تیرے چہرے کی اداسی ہو جاوں

 

یا تو دریا میں بدل جاوں کہ لہریں اٹھیں
ہا بگولوں کاکہا مان لوں آندھی ہو جاوں

 

اس کی جانب سے کوئی ہجر مجھے آ کے لگے
اور میں معرکہ ء عشق میں زخمی ہو جاوں

 

جبر کی طرح کوئی جبر کروں اپنے ساتھ
کیوں نا کچھ دیر کو میں اپنے پہ حاوی ہو جاوں

Advertisements

ہم کہاں اور تم کہاں جاناں

ہم کہاں اور تم کہاں جاناں

ہیں کئی ہجر درمیاں جاناں

 

رائیگاں وصل میں بھی وقت ہوا

پر ہوا خوب رائیگاں جاناں

 

میرے اندر ہی تو کہیں گم ھے

کس سے پوچھوں ترا نشاں جاناں

 

عالم بیکراں میں رنگ ھے تو

تجھ میں ٹھہروں کہاں کہاں جاناں

 

روشنی بھر گئی نگاہوں میں

ہو گئے خواب بے اماں جاناں

 

اب بھی جھیلوں میں عکس پڑتے ہیں

اب بھی ھے نیلا آسماں جاناں

 

ھے جو پر خوں تمہارا عکس خیال

زخم آئے کہاں کہاں جاناں

Mai To Bin Dekhe Bahal JaoNga Lekin Tum Log…

Mai  to bin dekhe bahal jaoNga lekin tum log
Toor kahta hai ke jal jaoNga lekin tum log

Khak se raabta rakhna tumhe manzoor nahi
Mai to mitti men bhi ral jaoNga lekin tum log

Dagmagata jo nahi hai wo sambhalta bhi nahi
DagmagaoN ga sambhal jaoNga lekin tum log

Tum bhi charte hue suraj ke pujari nikle
Ek pahr aur  hai dhal jaoNga lekin tum log

Khud hi ek sjola E jawala hooN mera kya hai
Bhujh ke uspaar nikal jaoNga lekin tum log

Qaeda hai hai ke pighal jata hai jalne wala
Raoshbi deke pighal jaoNga lekin tum log

Kya Zamana Tha K Har Roz Mila Karte The….

Kya zamana tha k har roz mila karte the
Raat bhar chaNd k hamraah phira karte the

JahaaN tanhaaiyaaN sar phoR k so jati haiN
Un makaanoN meN ajab log raha karte the

Kar diya aaj zamaane ne unheN bhi majbur
Kabhi yeh log mere dukh ki dawa karte the

Dekh kar jo hamaiN chup chap guzar jata hai
Kabhi us shakhs ko hum pyar kiya karte the

IttefaaQaat E zamana bhi ajab haiN ‘Nasir’
Aaj woh dekh rahe haiN jo suna karte the

Kitnaa kaam kareNge……

Kitnaa kaam kareNge

Ab aaraam kareNge

Tere diye hue dukh

Tere naam kareNge

Ahal-E-dard hi aakhir

KhushiyaaN aam kareNge

Kaun bacha hai jise voh

Zer-E-daam kareNge

Naukri chhoR k ‘Nasir’

Apnaa kaam kareNge

Dukh Fasana Nahi Ke Tujh Se KaheN…….

Dukh fasana nahi ke tujh se kaheN
Dil Bhi Mana nahi k tujh se kaheN

Aaj tak apni bekali ka sabab
Khud bhi jana nahi k tujh se kaheN

Be tarah haal E dil hai aur tujh se
Dostana nahi k tujh se kaheN

Ek To harf E aashna tha magar
Ab zamana nahi k tujh se kaheN

Qasid hum faqeer logoN ka
Ab thikana nahi k tujh se kaheN

Ya khuda  dar E dil hai bakhshish dost
Aab O dana nahi k tujh se kaheN

Ab to apna is gali men ” Faraz “
Aana jana nahi k tujh se kaheN

Ghum Gusari ka Daur Hai Shayad………

Ghum gusari ka daur hai shayad
Ashk kazib hai  wo phirte hain

Khidmat E khalq k fasane hain
Baab nuha ka rang bharte hain

Aadmiyat nahi hai insaN men
Sath maqtal ko le k phirte hain

Kushnuma ranggat pe bahoot hota
Khoon holi k jo bhikherte hain

Kitne kamzarf hain kamine log
Aag nafrat k kuyn bharakte hain

Shikwa “Basit ” kare to kis se kare
Her taraf sabke kaan bahre hain